Khawab Nama Khwab Main Bhagna

Khawab Nama Khwab Main Bhagna

Khawab Nama Khwab Main Bhagna

Khawab Nama Khwab Main Bhagna

Hazrat ibne sereen (R.A)ne farrmaya ke khwab main bhagna rihaii hai.ager koi shaks khwab main dekhe ke doshman se ya kissi katne wale janwar se bhaga hai. daleel hai ke shar or khaof se ammn main hoga or doshman par fatah paye ga.kyun ke hazrat musa  alieh slam ne khwab main dekha tha ke ap firaon maloon se bhage hain.phir ap ne firaon ki shrarat se nijaat pai or akhar kar us par fatah hoi.

Khawab Nama Khwab Main Bhagna

Hazrat ibahim karmani (R.A) ne farmaya hai.ager dekhe ke doshman se choop kr bhaga hai or doshman ne usko dekh liya hai.daleel hai ke fiker mand hoga. Bhaagna (1) khwab main bhaagna allah talah ki taraf ruju karne pr daleel he

Khawab Nama Khwab Main Bhagna

hazrat jabar maghrabi ne agar dekhe k log bhaag rahe hen to daleel he kisi bare aadmi ki tohmat lage gi  farmaan e haq taala he  tarjuma (jis din tu use dekhe ga to dood pilaane wali aorten apne bchon ko bhool jaen gi )

agar dekhe k mard aorton se bhagte hen agar aorten mslaah aor parsaa hen to baddi(burai) par daleel he agar mufsid hen to bhlaai par daleel hen  

hazrat jafar sadiq ne farmaya khwab men bhagna shadi he  shart ye k us jaga gham aor museebat ki awaz ho

farmaan e  khudawandi hai.(tum allah talah ki taraf rajo kro main tumhin usi se vazeh taor par dalne wala ho

(2) khwab main bhaagna viladat,ammn or taoba or maot pr dalalat karta hai.khud ko doshman ke khaof se bhaagta howa dekhe to us se ammn main hoga.ager aalim khud ko khwab main bhaagta dekhe to uhda e qazaa( judge) hasil hoga.

Khawab Nama Khwab Main Bhagna

 

اچھا خواب نعمتِ خدا وندی

حضورﷺ نے ارشاد فرمایا ” بشارتوں کے سوا کوئی چیز باقی نہیں رہی ۔ صحابہ نے عرض کیا ےیا رسولاللہ بشارتوں سے کیا مراد ہے آپ نے فرمایا سچا خواب ۔(صحیح بخاری عن ابی ھریرہ) بخاری ومسلم کی متفق علیہ حدیث ہے آنحضرت ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ سچا خواب نبوت کا چھیاسواں حصہ ہے ۔

اس حدیث شریف معلوم ہوا کہ سچا خواب رویائے صالحہ علوم نبوت کا ایک جزو ہے اور علم نبوت باقی ہے گو انبیاءکرام کی آمد کا سلسلہ موقوف ہوچکا دوسرے لفظوں میں سچا خواب علوم نبوی کا عکس ہے۔

خواب کی اقسام

امام محمد بن سیرین ارشاد فرماتے ہیں کہ خواب تین قسم کے ہوتے ہیں ۔

1- مبشرات خداوندی –

2- تخویفِ شیطان) شیطان کے زیرِ اثر ) –

3- حدیثِ نفس یعنی ذہنی اور دماغی خیلات کا عکس –

اس تقسیم سے ظاہر ہوتا ہے کہ خواب کے تمام اقسام صحیح قابلِ تعبیر اوردر خوراعتناء نہیں ہوتے تعبیر اور اعتبار کے لائق وہی خواب ہوتے ہیں جو حق تعالیٰ کی طرف سے بشارت اور اعلام پر مبنی ہوں۔

علم تعبیر کے چھ مشہور امام
-علم تعبیر میں درج ذیل چھ آئمہ کرام کے اقوال کے بطور سند پیش کیا جاتا ہے
حضرت دانیال علیہ اسلام
حضرت امام جعفر صادق رضی اللہ تعالیٰ علیہ
حضرت امام محمد بن سرین رحمتہ اللہ علیہ
حضرت امام جابر مغربی رضی اللہ تعالیٰ علیہ
حضرت امام ابراہیم کرمانی علیہ رحمتہ اللہ علیہ
حضرت امام اسمعیل بن شوکت رحمتہ اللہ علیہ
تعبیر بیان کرنے کیلئے ضروری علوم
۔علم تفسیرعلم ضرب الامثالعلم حدیثاشعار عربعلم اشتقاق (صرف)نوادرعلم الغاتعلم الفاظ متد اَولہچنانچہ ایسے علماء ہے تعبیر بیان کرنے کے اہل ہیں جو ان علوم کے ماہر اور متقی پرہیزگار ہوں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔